11

امریکی صدر ٹرمپ کی دلچسپ حرکتیں اور متنازعہ فیصلے

ڈونلڈ ٹرمپ کے متنازع فیصلوں اور دلچسپ حرکتوں کی لسٹ طویل ہے تاہم ان میں سے کچھ قارئین کے لیے پیش خدمت ہیں۔

امریکہ کا صدر بننے کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ نے ناقد میڈیا  کو ‘جعلی نیوز چینل’ قرار دیا اور سی این این کے صحافی جم اکاسٹا سمیت متعدد صحافیوں کے ساتھ صدر ٹرمپ کی لڑایاں بھی ہوئیں۔

میڈیا کو دھماکانے کے لیے انہوں نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی ایک پرانی ویڈیو جاری کی جس میں صدر ٹرمپ کو ریسلنگ رِنگ کے باہر دیکھا جاسکتا ہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے ہی مقرر کردہ درجنوں وزیروں اور مشیروں کو برطرف بھی کیا۔

2017 کے دوران صدر ٹرمپ نے سات مسلم ممالک پر سفری پابندیاں عائد کر دیں اور مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دار الحکومت تسلیم کرنے کا فیصلہ بھی کیا۔ اقوام متحدہ (یو این) کی جنرل اسمبلی میں بھاری اکثریت سے ان کے فیصلے کے خلاف قرارداد منظور کی گئی۔

امریکی تاریخ کا طویل ترین شٹ ڈاؤن بھی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی وجہ سے ہی ہوا۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے مسلمان ارکان الہان عمر اور رشیدہ طلیب سمیت  ایوان نمائندگان کی چار خواتین ارکان پر کڑی تنقید کی، ان کے ممالک کو بدترین قرار دیتے ہوئے انہیں اپنے اپنے آبائی ممالک واپس چلے جانے کا بھی کہا۔

ستمبر 2019 میں امریکی ستمبر نے طوفان سے ریاست الباما کے متاثر ہونے کی غلط ٹویٹ کی، نیشنل ویدر سروس نے صدر ٹرمپ کا دعویٰ مسترد کر دیا۔

یوکرائنی صدر کو سیاسی مخالف جو بائیڈن کے خلاف اقدامات کی ترغیب دینے کی متنازع ٹیلی فون کال پر صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو مواخدہ کی کارروائی کا سامنا کرنا پڑا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کورونا وائرس سے متعلق متعدد غلط بیانات جاری کیے، صحت کے متعلقہ ادارہ کی منظوری کے بغیر غلط ادویات کو کورونا کا علاج قرار دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں