13

کووڈ 19 مرض کے خلاف ایک اور ویکسین کی غیرمعمولی کامیابی کا دعویٰ

امریکی کمپنی نے موڈرنا نامی ایک اور کووڈ 19 ویکسین بنائی ہے جس کے متعلق کامیابی کا غیرمعمولی دعویٰ کیا گیا ہے۔ فوٹو: سی این این

امریکی کمپنی نے موڈرنا نامی ایک اور کووڈ 19 ویکسین بنائی ہے جس کے متعلق کامیابی کا غیرمعمولی دعویٰ کیا گیا ہے۔ فوٹو: سی این این

میساچیوسٹس: فائزر اور بایونٹیک کی جانب سے کووڈ 19 کی ایک نئی ویکسین کے بارے میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ یہ کووڈ 19 کی بیماری کو 90 فیصد تک روک سکتی ہے اور اب اس سے بھی بڑھ کر موڈرنا نامی کمپنی نے اپنی نئی ویکسین کے بارے میں دعویٰ کیا ہے کہ یہ عام صحت مند انسانوں پر لگانے کے بعد انہیں کووڈ 19 سے بچانے میں 94.5 فیصد تک مؤثر ہے۔

اس طرح دسمبر تک امریکا کے پاس کووڈ 19 کے خلاف دو ویکسین آگئی ہیں جن کی کم ازکم 6 کروڑ خوراکیں اس سال کے آخر تک دستیاب ہونے کی امید ہے۔ یہ ویکسین بھی بایونٹیک کی طرح میسنجر آراین اے (ایم آر این اے) کی طرز پر کام کرتی ہے۔

اچھی بات یہ ہے کہ اسے عام فریج کے درجہ حرارت پر محفوظ کیا جاسکتا ہے۔ اس موقع پر موڈرنا کمپنی کے سربراہ اسٹیفن ہوگ نے بتایا کہ طبی آزمائش کے شرکا کو 28 دن کے وقفے سے ویکسین کی دو خوراکیں دی گئی تھیں اور بعد ازاں 100 میں سے صرف 5 افراد ہی کورونا کے شکار ہوئے یعنی اس کی افادیت 95 فیصد تک ہے۔

تاہم یہ اعدادوشمار بہت کم طبی آزمائش کو ظاہر کرتے ہیں کیونکہ اس سے قبل فائزر اور بایونٹیک ویکسین میں 40 ہزار افراد کا ڈیٹا شامل کیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں