16

کے پی ٹی کے 1200 ملازمین کی برطرفی کالعدم

کے پی ٹی میں غیرقانونی بھرتیوں سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے ملازمین کو برطرف کرنے کا حکم غیرقانونی قرار دے دیا۔ عدالت نے ملازمین کی برطرفی کے خلاف درخواستیں منظور کرلیں۔

خیال رہے جون 2012 سے مارچ 2013 کے دوران کے پی ٹی میں 1200 ملازمین کو بھرتی کیا گیا تھا۔ ملازمین کو بعد میں برطرف کیا گیا تھا۔ برطرف ملازمین نے فیصلے کو عدالت میں چیلنج کیا تھا۔

خیال رہے کہ گزشتہ سال سندھ ہائی کورٹ نے کے پی ٹی کی زمین  کراچی پورٹ ٹرسٹ کے حوالے کرنے کا حکم دے دیا تھا۔

سندھ حکومت نے زمین کی حوالگی کیلئے ہائیکورٹ سے رجوع کیا تھا۔ کے پی ٹی ہاوسنگ سوسائٹی نے حکومت سندھ کیخلاف زمین کی ملکیت کا کیس جیت لیا تھا۔

عدالت نے مائی کولاچی بائی پاس پر130 ایکڑ زمین کے پی ٹی کی ملکیت قراردیدی تھی۔ حکومت سندھ نےماحولیاتی اثرات کے نام پر زمین پر ترقیاتی کام روکنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا تھا۔

حکومت سندھ نے زمین کی ملکیت کا دعویٰ کیا تھا لیکن محکمہ ریونیو نے تسلیم کیا کہ زمین کے پی ٹی استعمال کررہی ہے،صوبائی حکومت نےکے پی ٹی کی جانب سے امریکی قونصل خانے کو زمین دینے پر کوئی اعتراض نہیں کیا تھا،۔

دالت نے 18 سال کی قانونی جنگ کے بعد کے پی ٹی کے حق میں فیصلہ دیدیا تھا۔ عدالت نے صوبائی حکومت کو ہدایت کی تھی کہ کے  پی ٹی آفیسرز ہاوسنگ کی زمین پر کوئی مداخلت نہ کی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں