18

کورونا کے بعد برطانیہ کو ایک اور آفت کا سامنا

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں سمندری طوفان بیلا سے طوفانی ہواؤں اور بارشوں کا سلسلہ شروع ہو گیا۔ ہواؤں کی رفتار 100 میل فی گھنٹہ ریکارڈ کی گئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق بیڈ فورڈ شائر اور شمالی آئرلینڈ میں سڑکیں تالاب بن گئی ہیں۔ حکومت نے بیڈفورڈ شائر میں تیرہ سو مکانات کو خالی کرانے کی ہدایت کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق طوفان کی وجہ سے کئی علاقوں میں سیکڑوں گھر بجلی سے محروم ہو گئے۔

ملک کے بیشتر علاقوں میں بارش اور سیلاب کے الرٹ بھی جاری کیے گئے ہیں۔

نیا کورونا وائرس برطانیہ میں 56 فیصد زیادہ تیزی سے پھیلنے لگا

دوسری جانب نیا کورونا وائرس برطانیہ میں 56 فیصد زیادہ تیزی سے پھیلنے لگا ہے۔

ماہرین کے مطابق نیا کورونا وائرس پرانے وائرس سے زیادہ خطرناک ہو رہا ہے اور برطانیہ میں یہ وائرس 56 فیصد زیادہ تیز رفتاری سے پھیل رہا ہے۔

نئی تحقیق میں ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ نیا کورونا وائرس برطانیہ میں زیادہ اموات کا سبب بن سکتا ہے تاہم یہ ابھی یقین سے نہیں کہا جا سکتا کہ نیا وائرس پرانے وائرس کے مقابلے میں کم یا زیادہ مہلک ہے

ماہرین کا کہنا ہے کہ وائرس سے اسپتالوں میں مریضوں کا بوجھ بڑھے گا ۔  نومبر میں کیا گیا لاک ڈاون بھی کورونا کیسز میں کمی کا سبب نہیں بن سکا۔

خیال رہے کہ چند روز قبل برطانیہ میں کویڈ 19 کی نئی قسم سامنے آئی تھی۔ 

برطانوی وزیرصحت میٹ ہینکاک نے کہا تھا  کہ لندن میں ایک ہفتے کے دوران نئی طرزکے کورونا کیسز سامنے آئے ہیں جس سے نمٹنے کے لیے سخت اقدامات ناگزیر ہیں۔

عالمی ادارہ صحت کا اس بابت کہنا تھا  کہ برطانیہ میں کورونا کی نئی قسم سے آگاہ ہیں۔  

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں