23

ایسٹرازینکا ویکسین کے فوائد خطرات سے زیادہ ہیں، ڈبلیو ایچ او

ڈبلیو ایچ او نے ہدایت کی ہے کہ ایسٹرازینکا ویکسین کا استعمال جاری رکھنا چاہیے اور ہم تازہ ترین دستیاب اعداد و شمار کا جائزہ لے رہے ہیں۔

خیال رہے کہ خون میں پھٹکیاں بننے کے واقعات کے بعد متعدد یورپی ممالک نے ایسٹرا زینیکا ویکسین کا استعمال عارضی طور پر روک دیا ہے۔

یورپ میں ایسے 30 کیسز سامنے آئے ہیں جن میں ویکسین لگوانے والوں میں خون جمنے کے واقعات رپورٹ ہوئے ہیں۔

بلغاریہ، ڈنمارک، آئس لینڈ اور ناروے نے بھی ایسٹرا زینکا کی ویکسین کا استعمال روک دیا ہے۔ اٹلی اور آسٹریلیا نے حفاظتی اقدامات کے طور پر ویکسین کی مخصوص بیچز استعمال کرنا روک دی ہیں۔

ڈبلیو ایچ او نے گزشتہ ہفتے بھی کہا تھا کہ اس ویکسین کا خون جمنےسے کوئی تعلق نہیں ہے۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ ہمارے پاس ایک کروڑ افراد کا حفاظتی ڈیٹا موجود ہے جس میں ویکسین سے شریانوں میں خون جم جانے یا پھر خون میں لوتھڑے بننے کے شواہد نہیں ملے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں